ہمیں مسلمان ہونے کی سزا مل رہی ہے، صحافی صدیق کپن کے ساتھ گرفتار عتیق الرحمان کی اہلیہ کا بیان۔
نئی دہلی: صحافی صدیق کے ساتھ گرفتار کیے گئے طلبہ لیڈر عتیق الرحمان یوپی کی راجدھانی لکھنو کے ایک اسپتال میں زیر علاج ہیں، ان کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ وہ ’لقوہ‘ سے متاثر ہیں اور ان کی حالت ٹھیک نہیں ہے۔ رحمان کی بگڑتی حالت کو دیکھتے ہوئے ۲۹ اگست کو لکھنو جیل کے ڈاکٹروں سے مشورے کے بعد جیل افسران نے انہیں کنگ جارج میڈیکل یونیورسٹی لے گئے یہاں ڈاکٹروں کی صلاح پر انہیں علاج کے لیے داخل کرادیاگیا۔ جب ان کے اہل خانہ کو مظفر نگر میں اطلاع دی گئی تو ان کے اہل خانہ لکھنو پہنچ گئے، اہل خانہ کا کہنا ہے کہ رحمان کو دل سے متعلق بیماری ہے اور ان کے جیل میں رہتے ہوئے ایمس میں سال ۲۰۲۱ میں اوپن ہارٹ سرجری ہوئی تھی۔ رحمان کی اہلیہ سنجیدہ نے بتایاکہ میرے شوہر کا بایاں حصہ لقوہ سے متاثر ہے، سنجیدہ کے مطابق بیماری کی وجہ سے کسی کو پہچان نہیں پارہے ہیں۔ سنجیدہ نے کہاکہ ’ہمیں مسلمان ہونے کی سزا دی جارہی ہے‘۔