سنبھل:  اتر پردیش کے ضلع سنبھل کے چندوسی تھانے کے سجنی گاؤں میں دھرمیش نام کے شخص نے تھانے میں اپنے بیٹے کی گمشدگی کی رپورٹ درج کرائی، جس کے بعد پولیس نے ایک ٹیم تشکیل دی، تفتیش کے دوران پولیس کو پتہ چلا کہ دھرمیش اپنے ہی بیٹے کو ناجائز سمجھتا تھا، جس کی وجہ سے اس نے معصوم کو بے دردی سے قتل کردیا۔ ایس پی چکریش مشرا کے مطابق 5 جنوری کو بچے کی گمشدگی کی رپورٹ اس کے والد نے درج کروائی تھی، جس کے بعد پولیس انتظامیہ نے گاؤں میں لگے سی سی ٹی وی فوٹیج کی جانچ کی تو معصوم کی لاش گنے کے کھیت سے برآمد ہوئی۔ایس پی نے بتایا کہ معصوم لاپتہ نہیں ہوا تھا بلکہ اس کے والد دھرمیش نے جوتے کے تسمے سے معصوم کا گلا دبا کر لاش کو گنے کے کھیت میں پھینک دیا تھا۔ پولیس کے مطابق ملزم دھرمیش کو اپنی بیوی کے کردار پر شک تھا جس کی وجہ سے وہ بیوی سے مسلسل جھگڑا کرتا تھا اور بچے کو بری طرح سے مارتا پیٹتا تھا اسی دوران پانچ جنوری کو باپ نے بچے کو کھیت میں لے جا کر بے دردی سے گلا گھونٹ کر قتل کردیا۔ ایس پی نے مزید بتایا کہ قاتل باپ کو گرفتار کر لیا گیا ہے اور ملزم نے قتل کا اعتراف بھی کر لیا ہے، فی الحال مقتول کی لاش کو پوسٹ مارٹم کے لیے ضلع اسپتال بھیج دیا گیا ہے۔