بی جے پی ایم ایل نے مسلم تاجروں کی حمایت کی، کرناٹک میں معاشی نسل پرستی کا سوال ہی نہیں پیدا ہوتا: انیل بےناکے۔
بنگلورو : کرناٹک میں مسلم تاجروں کے معاشی بائیکاٹ کے خلاف بی جے پی ایم ایل اے بےناکے نے کہا کہ وہ مسلم تاجروں پر معاشی نسل پرستی مسلط نہیں ہونے دیں گے۔ تاہم حکمراں جماعت بی جے پی نے پہلے ہی واضح کر دیا ہے کہ وہ مندر کے احاطے اور مذہبی میلوں میں غیر ہندو تاجروں کو اجازت نہ دینے پر مندر کے حکام کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کرے گی۔
بی جے پی ممبر اسمبلی انیل بے ناکے نے کہاکہ ’’ لوگوں کو صرف مخصوص دکانوں سے خریدنے کے لیے کہنا غلط ہے۔ میلوں میں مسلم تاجروں پر پابندی لگانے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ ہم انہیں نہیں روکیں گے‘‘۔انہوں نے مزید کہا کہ ’’ہر ایک کو اپنی پسند کے مطابق تجارت کرنے کی آزادی ہے۔ لوگوں کو فیصلہ کرنا چاہیے کہ وہ کہاں سے خریدنا چاہتے ہیں‘‘۔
دریں اثنا، چامراج نگر ضلع کے گنڈلوپیٹ قصبےمیںبجرنگ دل نے تاریخی شری ہمواد گوپال سوامی پہاڑی میلے میں غیر ہندوؤں کو اجازت نہ دینے کے لیے ضلع حکام کو ایک میمورنڈم پیش کیا ۔ تنظیم نے یہ بھی مطالبہ کیا ہے کہ تلہٹی میں مسلم تاجروں کی دکانیں اور کاروباری اداروں کو فوری طور پر ہٹایا جائے۔