'آپ' ایم ایل اے امانت اللہ خان کو راحت، ساکیت کورٹ نے دی ضمانت۔
نئی دہلی:امانت اللہ خان کو جمعرات کو مدن پور کھادر کے علاقے میں ایس ڈی ایم سی کے ذریعہ تجاوزات مہم میں رکاوٹ ڈالنے اور سرکاری ملازمین کو کام سے روکنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔
دہلی کے ساکیت کورٹ نے جمعہ کو عام آدمی پارٹی (اے اے پی) کے ایم ایل اے امانت اللہ خان کو ضمانت دے دی۔ امانت اللہ خان کو جمعرات کو مدن پور کھا در کے علاقے میں ایس ڈی ایم سی کے انسداد تجاوزات مہم میں رکاوٹ ڈالنے اور سرکاری ملازمین کو کام سے روکنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔ بعد میں اسے عدالتی حراست میں بھیج دیا گیا۔ 'آپ' ایم ایل اے کو ہسٹری شیٹر قرار دیا گیا، دہلی پولیس نے اب تک 18 کیس درج کیے ہیں۔
جانکاری کے مطابق دہلی کے مختلف علاقوں میں میونسپل کارپوریشن کی انسداد تجاوزات مہم مسلسل جاری ہے۔ جمعرات کو جنوب مشرقی دہلی کے مدن پور کھدر علاقے میں پرتشدد مظاہروں اور پتھراؤ کے دوران مقامی لوگوں نے بلڈوزر کو روکنے کی کوشش کی اور سیکورٹی اہلکاروں پر پتھراؤ کیا۔
اس دوران آپ کے ایم ایل اے امانت اللہ خان نے مدن پور کھادر کے کنچن کنج میں اپنے حامیوں اور مقامی لوگوں کے ساتھ میونسپل کارپوریشن کی اس مہم کی مخالفت کی تھی۔ اس کے بعد، اے اے پی ایم ایل اے کو ہنگامہ آرائی اور سرکاری ملازمین کے کام میں رکاوٹ ڈالنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا، جہاں سے بعد میں انہیں عدالتی حراست میں بھیج دیا گیا۔ بتایا جا رہا ہے کہ امانت اللہ خان کی گرفتاری کے خلاف آج اوکھلا اور شاہین باغ کے کئی بازار بند رکھے گئے ہیں۔