شاہجہاں:  یوپی کے شہر شاہجہانپور میں بدھ کے روز شر پسندوں نے مسجد میں داخل ہو کر کلام پاک کو (نعوذ باللہ) نذرآتش کر دیا، جس کے بعد مسلمانوں میں سخت غم وغصہ پایا جا رہا ہے۔ پولس نے ملعون و بدبخت تاج محمد کو سی سی ٹی وی فوٹیج کی بنیاد پر گرفتار کرلیا ہے۔ قبل ازیں ایمان سوز حرکت کے خلاف بدھ کی شب بڑی تعداد میں لوگوں نے سڑک پر اتر کر احتجاج کیا اور گناہ گاروں کو گرفتار کر نے اور ان پر سخت کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا۔
پولیس نے پہلے نامعلوم افراد کے خلاف مقدمہ درج کر کے معاملہ کی تفتیش شروع کر کی بعدازیں مسجد کے نزیدک واقع شوروم کی سی سی ٹی وی فوٹیج میں نظر آنے والے دو مشکوک افراد کو گرفتار کرلیا۔ اطلاع کے مطابق گرفتار تاج محمد کا گھر مسجد سے تین کلو میٹر دور ہے، وہ باڈوجئی محلے کا رہنے والا ہے۔ تاج محمد نے بتایاکہ میں کوئی کام نہیں کرتا ہوں، ہمیشہ خالی ادھر ادھر گھومتا رہتا ہوں، اہل خانہ میری شادی نہیں کرا رہے ہیں جس سے میں پریشان رہتا ہوں، مذہبی کتاب کو کیوں جلایا؟ اس سوال پر بدبخت تاج محمد نے کہاکہ ’’میں نہیں میری روح نے جلایا ہے‘‘۔