باگل کوٹ: کرناٹک کے باگل کوٹ میں ایک شخص نے مبینہ طور پر اپنے والد کو قتل کر دیا اور لاش کے 32 ٹکڑے کر کے کھلے بورویل میں پھینک دیا۔ اس واقعہ کو شردھا واکر قتل کیس کے نظریہ سےدیکھاجارہا ہے۔ قتل کا انکشاف ہونے کے بعد پولیس نے ارتھ موورز کی مدد سے شخص کے جسم کے اعضاء برآمد کر لیے۔ ملزم وٹھلا کولالی کو گرفتار کر کے عدالتی حراست میں بھیج دیا گیا ہے۔
بتایا جاتا ہے کہ 6 دسمبر کو 20 سالہ وٹھلا نے مبینہ طور پر اپنے والد پرشورام کلالی (53) کو غصے میں آ کر لوہے کی سلاخ سے قتل کر دیا۔ پولس کے مطابق پرشورام اکثر نشے میں دھت ہو کر اپنے دو بیٹوں میں سے چھوٹے وٹھلا کے ساتھ بدسلوکی کرتا تھا۔ اس کی بیوی اور ایک بڑا بیٹا الگ الگ رہتے ہیں۔
گزشتہ منگل کو اپنے والد کی مسلسل بدسلوکی سے مشتعل وٹھلا نے اپنے والد کو لوہے کی سلاخ سے مار ڈالا۔

قتل کے بعد، وٹھلا نے پرشورام کی لاش کے 32 ٹکڑے کیے اور باگل کوٹ ضلع کے ایک قصبے مدھول کے مضافات میں منتور بائی پاس کے قریب واقع اپنے کھیت میں کھلے بورویل میں پھینک دیا۔