ساؤ پالو:  برازیل کے سابق عظیم فٹ بال کھلاڑی اور تین بار کے ورلڈ کپ چیمپئن پیلے کا انتقال ہوگیا۔ان کی عمر 82 برس تھی۔عظیم فٹبال کھلاڑی کی موت کے بعد کھیل کی دنیا میں غم کے بادل چھا گئے ہیں برازیل کے صدر جیر بولسونارو نے تین بار کے عالمی فٹ بال چیمپئن پیلے کے اعزاز میں تین دن کے قومی سوگ کا اعلان کیا ہے۔ یہ اطلاع سی این این برازیل کی رپورٹ میں دی گئی ہے۔ ان کی بیٹی کیلی ناسیمینٹو نے سوشل میڈیا پر ان کی موت کی اطلاع دی۔ پیلے کینسر سے لڑ رہے تھے۔ انہیں 29 نومبر کو ساؤ پالو کے البرٹ آئن اسٹائن ہسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔

دنیا میں فٹ بال کا بے تاج بادشاہ یا فٹ بال کا جادوگر بڑی آنت کے کینسر میں مبتلا تھا اور ان کے جسم کے بیشتر حصوں نے کام کرنا چھوڑ دیا تھا۔اس سے پہلے دن میں مسٹر بولسنارو نے پیلے کے اہل خانہ سے تعزیت کا اظہار کیا۔ صدر نے ٹویٹ کیا کہ فٹ بال کے اس عظیم کھلاڑی نے برازیل کو نئی بلندیوں پر لے جاکر دنیا کا نام روشن کیا ہے۔بولسنارو نے ٹویٹ کیاکہ "پیلے نے ہمیشہ فٹ بال کو ایک فن اور اپنی خوشی کے طور پر دیکھا ہے۔"واضح رہے کہ ستمبر 2021 میں پیلے کو بڑی آنت کے ٹیومر کی تشخیص ہوئی تھی۔ اس سال میں وہ تین ٹیومر اور مثانے کے انفیکشن کے علاج کے لیے دو بار اسپتال میں داخل ہوئے۔ پیلے کو 30 نومبر کو دل کے مسائل سمیت جسم میں سوجن کی وجہ سے اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔ بعد میں بتایا گیا کہ پیلے کو کیموتھراپی دی گئی جس کے کوئی تسلی بخش نتائج نہیں ملے۔پیلے کو پہلے بھی کئی بار چیک اپ کے لیے اسپتال میں داخل کیا گیا تھا۔ حال ہی میں قطر میں فیفا ورلڈ کپ کے آغاز پر پیلے نے اپنے انسٹاگرام ہینڈل پر ایک تصویر پوسٹ کی تھی۔ انہوں نے حمایت کرنے پر مداحوں کا شکریہ ادا کیا تھا۔ اسرائیلی البرٹ آئن سٹائن ہسپتال نے پیل کے اہل خانہ سے ہمدردی ظاہر کی ہے اور فٹ بال کے بادشاہ پیل کی موت سے ان کے مداح بہت مایوس اور غمزدہ ہیں۔