لکھنؤ: ثانیہ مرزا جو نیشنل ڈیفنس اکیڈمی (این ڈی اے) کا امتحان پاس کرنے کے بعد ملک کی پہلی مسلم فائٹر پائلٹ بننے جا رہی ہیں، نے منگل کو وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ سے ملاقات کی۔
ریاستی وزیر برائے اقلیتی بہبود دانش آزاد انصاری نے بتایا کہ ثانیہ مرزا نے سی ایم یوگی سے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی اور اس دوران ان کے والد شاہد علی اور والدہ تبسم مرزا بھی موجود تھیں۔
دانش انصاری نے کہا کہ سی ایم یوگی آدتیہ ناتھ نے ثانیہ مرزا کو مبارکباد دی اور ان کے روشن مستقبل کی خواہش کی۔ وزیراعلیٰ نے ان کے والدین کو بھی مبارکباد دی اور کہا کہ ہماری بچیوں کو ایسے ریکارڈ بنانے کی ضرورت ہے۔دانش انصاری کے مطابق سی ایم یوگی نے کہا کہ اگر ثانیہ کو کبھی حکومت سے کسی قسم کے تعاون کی ضرورت ہو تو وہ بلا جھجھک بتا دیں۔ حکومت نوجوانوں کی تعلیم اور حوصلہ افزائی کے لیے ہم ہروقت تیار ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ثانیہ اقلیتی سماج کا فخر ہے۔ ریاست کی بی جے پی حکومت نے خاص طور پر اقلیتوں کے لیے تعلیم اور خواتین کو بااختیار بنانے کی سمت میں بہت کوششیں اور موقع فراہم کیا ہے۔ اس کے نتیجے میں، ایک مشترکہ خاندان میں پیدا ہونے والی ثانیہ مرزا نے اتر پردیش کی پہلی خاتون پائلٹ ہونے کا کارنامہ انجام دے کر ریاست کا نام روشن کیا ہے۔ ثانیہ مرزا کی ٹریننگ پونے میں ہوگی۔
اتر پردیش کے مرزا پور ضلع کے جسوور گاؤں کی ثانیہ مرزا نے اس سال اپریل میں این ڈی اے کا امتحان دیا تھا۔ نومبر میں جاری ہونے والے نتیجے میں ان کا انتخاب کیا گیا ہے۔ وہ ان دو خواتین میں سے ایک ہیں جنہیں فلائنگ ونگ میں منتخب کیا گیا ہے۔ثانیہ کی ٹریننگ پونے میں ہوگی۔ ٹریننگ کے بعد ثانیہ مرزا ملک کی پہلی مسلم خاتون فائٹر پائلٹ بن سکتی ہیں۔ اگر وہ فائٹر پائلٹ بنتی ہیں تو اتر پردیش کی پہلی خاتون فائٹر پائلٹ بھی ہوں گی۔