نئی دہلی:  شمالی ہندوستان کے کئی شہروں میں درجہ حرارت صفر سے نیچے چلا گیا ہے۔ اس لحاظ سے قومی راجدھانی دہلی کو یقینی طور پر کچھ راحت ملی ہے۔ ہماچل پردیش کے شملہ میں تازہ برف باری کے نتیجے میں پڑوسی ریاستوں میں ٹھنڈی ہوائیں چل رہی ہیں۔ ہندوستانی محکمہ موسمیات کے ایک عہدیدار نے منگل کو یہ اطلاع دی۔اس اہلکار کے مطابق پنجاب، ہریانہ، چندی گڑھ اور دہلی، مشرقی راجستھان، شمال مغربی مدھیہ پردیش اور مغربی اتر پردیش میں کم سے کم درجہ حرارت میں 1-3 ڈگری سیلسیس کی گراوٹ درج کی گئی ہے۔ راجستھان کے فتح پور میں سب سے کم درجہ حرارت -3.7 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔ دہلی میں بدھ سے تین دن تک شدید سردی کی لہر جاری رہے گی۔محکمہ موسمیات کے مطابق قومی راجدھانی دہلی میں سردی کی لہر برقرار ہے۔ دہلی کے صفدرجنگ آبزرویٹری میں منگل کو کم سے کم درجہ حرارت 2.4 ڈگری سیلسیس ریکارڈ کیا گیا۔ پیر کو یہاں کم سے کم درجہ حرارت 1.4 ڈگری سیلسیس ریکارڈ کیا گیا۔ہندوستان کے محکمہ موسمیات کے مطابق، 18 اور 20 جنوری کو دو ویسٹرن ڈسٹربنس شمال مغربی ہندوستان کو متاثر کرنے کا امکان ہے۔ راجستھان، پنجاب، ہریانہ، چندی گڑھ اور دہلی کے کئی حصوں میں 18 جنوری تک شدید سردی کی لہر اور 19 جنوری کو مشرقی راجستھان کے الگ تھلگ حصوں میں سردی کی لہر کا امکان ہے۔ 19 جنوری تک اتر پردیش اور بہار کے مختلف حصوں میں سردی کی لہر برقرار رہ سکتی ہے۔دریں اثنا، دھند نے ریل خدمات پر تباہی مچا رکھی ہے۔ شمالی ریلوے کے ترجمان کے مطابق منگل کو دھند کی وجہ سے کم از کم 15 ٹرینیں ایک گھنٹے سے آٹھ گھنٹے کی تاخیر سے چل رہی تھیں۔ اندرا گاندھی بین الاقوامی ہوائی اڈے کے قریب واقع پالم آبزرویٹری میں حد نگاہ 500 میٹر ریکارڈ کی گئی۔