نئی دہلی: بجرنگ پونیا، وینیش فوگاٹ اور دیگر معزز پہلوانوں نے کھیل کے مرکزی وزیر انوراگ ٹھاکر کے ساتھ میٹنگ کے بعد ریسلنگ فیڈریشن آف انڈیا (ڈبلیو ایف آئی) کے خلاف جنتر منتر پر تین دن سے چلنے ولا اپنا احتجاج جمعہ کو د یر رات ختم کردیا۔
پونیا نے صحافیوں سے مخاطب کرتے ہوئے کہا،”ہم اپنااحتجاج ختم کر رہے ہیں کیونکہ حکومت نے ہمیں یقین دیا ہے کہ انصاف ہوگا۔ڈبلیو ایف آئی کے روز مرہ کے کاموں کو سنبھالنے اور ہماری تحفظات کاجائزہ لینے کے لئے کمیٹی بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔کھیل کے وزیر نے کہا ہے کہ کھلاڑیوں کی حفاظت ان کی اولین ترجیح ہے کیونکہ کھلاڑیوں کو فیڈریشن سے پہلے بھی دھمکیاں مل چکی ہیں۔ وزیر نے ہر قدم پر ہماری حمایت کی ہے۔ حمایت کرنے کیلئے سبھی کا شکریہ اداکرتے ہوئے احتجاج کو ختم کیا۔اس میٹنگ کے بعد ٹھاکرنے کہا کہ برج بھوشن سنگھ ڈبلیو ایف آئی کے صدر کا عہدہ چھوڑدیں گے اور جانچ میں تعاون کریں گے۔ انہوں نے بتایا کہ ڈبلیو ایف آئی کے خلاف جانچ کے لئے نگرانی کمیٹی کی تشکیل دی جائے گی۔ یہ کمیٹی کھلاڑیوں کے ذریعے لگائے گئے جنسی بد انتظامی،مالی ضابطگیاں اور انتظامی غلطی کے الزاموں کی جانچ کرے گی۔ کمیٹی چار ہفتے میں جانچ ہوری کرے گی۔