کشی نگر ایکسپریس میں نماز پڑھنے کا ویڈیو وائرل ،جانچ شروع۔
نئی دہلی: اتر پردیش کے کشی نگر کے کھڈا ریلوے اسٹیشن پر کھڑی ستیہ گرہ ایکسپریس ٹرین میں نماز کا ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہا ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ یہ واقعہ جمعرات کی دوپہر کو پیش آیا۔ اس میں کچھ لوگ ٹرین کے سلیپر کوچ کے کوریڈور میں چادر بچھا کر نماز پڑھ رہے ہیں۔ جس کی وجہ سے مسافروں کی آمد و رفت کا راستہ بند ہو گیا ہے۔ TV 9بھارت ورش کی خبر کے مطابق یہ ویڈیو بی جے پی لیڈر اور سابق ایم ایل اے نے سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کیا ہے۔جمعہ کو ویڈیو وائرل ہونے کے بعد آر پی ایف نے معاملے کی جانچ شروع کر دی ہے۔معلومات کے مطابق جمعرات کو ستیہ گرہ ایکسپریس (ٹرین نمبر 15273) کھڈا ریلوے اسٹیشن پر کھڑی تھی۔ اس دوران کچھ لوگ ٹرین کے ڈبے میں چادر بچھا کر نماز پڑھنے لگے۔ ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد آرپی ایف نے تحقیقات شروع کر دی ہیں۔آر پی ایف نے کہا کہ ابھی تک یہ واضح نہیں ہے کہ یہ نماز ادا کرنے والے کون لوگ ہیں اور کہاں سے آرہے تھے۔ دوسری جانب اس ویڈیو پر تبصرہ کرتے ہوئے اسے گردش کیا جا رہا ہے۔ کچھ نے اسے غلط قرار دیا ہے، جب کہ دوسروں نے اسے دوسرے مسافروں کو ہراساں کرنے والا عمل قرار دیا ہے۔وائرل ویڈیو میں دیکھا جا رہا ہے کہ کچھ لوگ ٹرین کے کوریڈور میں چادر بچھا کر نماز پڑھ رہے ہیں۔ اس دوران راہداری کے ذریعے دیگر مسافروں کی نقل و حرکت پر پابندی لگا دی گئی ہے۔ نماز پڑھنے والے لوگوں کے ساتھ ایک شخص جو برتھ پر بیٹھا ہوا ہے راہگیروں کو ہاتھ سے رکنے کا اشارہ کر رہا ہے۔