جھارکھنڈ میں سافٹ ویئر انجینئر سے اجتماعی عصمت دری، سیر پر گئی خاتون کے ساتھ ۱۰ لوگوں نے کی حیوانیت، حالت سنگین۔
رانچی: جھارکھنڈ کے چائباسہ میں ایک مشہور کمپنی کی سافٹ ویئر خاتون انجینئر سے 10 لوگوں نے اجتماعی عصمت دری کا شرمناک واقعہ انجام دیا ہے۔ اسے سنگین حالت میں علاج کے لیے اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ واردات جمعہ کی دیر شام کی بتائی جا رہی ہے۔ متاثرہ لڑکی ایک لڑکے (دوست) کے ساتھ اسکوٹی پر چائباسہ کے مفصل تھانہ حلقہ واقع ٹیکراتاہو میں ایئروڈرام علاقہ میں سیر و سیاحت کے لیے گئی تھی۔ اسی دوران آٹھ دس لوگوں نے دونوں کو گھیر لیا۔ لڑکی کے دوست کو مار پیٹ کر وہاں سے بھگا دیا گیا اور لڑکی کو وہاں سے دور جھاڑیوں کی طرف لے جا کر اجتماعی عصمت دری کا واقعہ انجام دیا۔ مخالفت کرنے پر انھوں نے لڑکی کے ساتھ بھی مار پیٹ کی۔ انھوں نے متاثرہ سافٹ ویئر انجینئر کا پرس اور موبائل بھی چھین لیا۔متاثرہ لڑکی جھینک پانی تھانہ کے ایک گاؤں کی رہنے والی ہے اور ان دنوں ورک فروم ہوم کر رہی ہے۔ جمعہ کو کام ختم کرنے کے بعد وہ گھومنے کے لیے نکلی تھی۔ واردات کے بعد وہ کسی طرح بدحواسی کی حال میں گھر لوٹی۔ اس نے گھر والوں کو پورے واقعہ کی جانکاری دی۔ اس کے بعد اہل خانہ نے پولیس کو اس واقعہ سے مطلع کیا۔چائباسہ کے پولیس سپرنٹنڈنٹ آشوتوش شیکھر نے بتایا کہ فی الحال نامعلوم جرائم پیشوں کے خلاف ایف آئی آر درج کر معاملے کی جانچ کی جا رہی ہے۔ شبہ کی بنیاد پر کچھ نوجوانوں کو حراست میں لے کر پوچھ تاچھ کی جا رہی ہے۔ یہ سبھی نوجوان آس پاس کے گاؤں کے ہیں۔