پریاگ راج: مختار انصاری کے ایم ایل اے بیٹے عباس انصاری کو جمعہ کی رات انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) نے گرفتار کیا ہے۔ منی لانڈرنگ کے معاملے میں عباس کو پوچھ گچھ کے لیے پریاگ راج دفتر میں طلب کیا گیا تھا۔ دوپہر ایک بجے سے گیارہ بجے تک قریب 9 گھنٹے پوچھ گچھ کے بعد ان کا میڈیکل کیا گیا اور ڈرائیور کو بھی حراست میں لے لیا گیا۔
مختار انصاری بندہ جیل میں بند ہیں۔ انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ، جو منی لانڈرنگ کی تحقیقات کر رہا ہے، نے مختار کے بیٹے مؤ ایم ایل اے عباس انصاری، بیوی افشاں انصاری کے خلاف لک آؤٹ نوٹس جاری کیا تھا۔ عباس کو سپریم کورٹ سے راحت مل گئی تھی مل۔ ED  نے عباس کو اس معاملے میں پوچھ گچھ کے لیے نوٹس بھیجا تھا۔ سمن جاری ہونے کے بعد عباس اپنے وکیل کے ساتھ جمعہ کی دوپہر سول لائنس میں ای ڈی کے دفتر پہنچے۔ اس دوران عباس سے پوچھ گچھ کے بعد اُنہیں گرفتار کر لیا گیا۔ عباس کو رات گیارہ بجے ای ڈی کی گاڑی سے محفوظ مقام پر بھیج دیا گیا۔ گرفتاری سے قبل ایم ایل اے عباس سے نو گھنٹے تک پوچھ گچھ کی گئی۔ عباس کو رات گیارہ بجے گرفتار کیا گیا اور طبی معائنہ کرایا گیا۔

سمیر چودھری۔