نئی دہلی: شمال مشرقی دہلی فسادات کے ملزم عمر خالد بہن کی شادی میں شرکت کے بعد واپس تہاڑ جیل لوٹ آئے۔عمر خالد کو گزشتہ دنوں 800 دن جیل میں گزارنے کے بعد اپنی بہن کی شادی میں شرکت کے لیے سات دن کے لیے عبوری ضمانت دی گئی تھی۔ اس دوران ان پر سخت شرائط لاگو کی گئ تھیں اور شادی کے دن کے علاوہ کسی اور دن گھر سے باہر جانے کی اجازت نہیں تھی ان پر میڈیا سے ملنے بات کرنے کی بھی پابندی تھی ۔عمر خالد نے ان شرائط کی خلاف ورزی نہیں کی۔
عمرخالد کے والد اور ڈبلیو پی آئ کے صدرڈاکٹرایس کیو آر الیاس نے ٹویٹ میں یہ جانکاری دیتے ہوے لکھا کہ عمر خالد اپنی بہن کی شادی میں شرکت کے بعد واپس جیل چلے گیے ہیں۔ ڈاکٹرالیاس نے خالد کی،والدہ اور خاندان کے دیگر افراد کو مبارکباد دیتے ہوئے ایک تصویر بھی شیئر کی۔انہوں نے لکھا ہم نے عمر خالد کی زندگی کی ایک جھلک دیکھی، خاندان اور دوستوں کے ساتھ وقت گزارا۔ اب ہم انتظار کرتے ہیں اور امید کرتے ہیں کہ انصاف ہوگا۔