ناگپور: مرکزی وزیر برائے ٹرانسپورٹ نتن گڈکری کو جان سے مارنے کی دھمکی دی گئی ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق ناگپور میں نتن گڈکری کے دفتر میں دو مرتبہ فون کر انھیں مارنے کی دھمکی دی گئی ہے، جس کے بعد پولیس الرٹ ہو گئی ہے اور تحقیقات بھی شروع کر دی گئی ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ دھمکی آمیز فون آج صبح ساڑھے ۱۱ بجے سے ساڑھے بارہ بجے کے درمیان آئے ہیں۔ یعنی ایک گھنٹہ کے درمیان ہی دو بار دھمکی آمیز فون کیے گئے۔موصولہ اطلاعات کے مطابق ہفتہ کی صبح ساڑھے گیارہ سے ساڑھے بارہ بجے کے درمیان دونوں مرتبہ فون گڈکری کے رابطہ عامہ دفتر میں آئے۔ اس میں تاوان کا مطالبہ کیا گیا ہے اور کہا گیا ہے کہ ایسا نہیں ہوا تو مرکزی وزیر گڈکری کو جان سے مار دیں گے۔ ایسی بھی خبریں سامنے آ رہی ہیں کہ فون کرنے والے داؤد کا نام بھی لیا ہے۔ایک میڈیا رپورٹ میں دھمکی آمیز فون تین مرتبہ آنے کی بھی بات کہی گئی ہے۔ اس کی خبر فوری طور پر گڈکری کے رابطہ عامہ دفتر کے لوگوں نے پولیس کو دی۔ خبر ملتے ہی سینئر پولیس افسران گڈکری کے دفتر میں پہنچ گئے اور تحقیقات شروع کر دی۔واضح رہے کہ نتن گڈکری کا شمار مودی حکومت کے ان وزراء میں ہوتا ہے جو اپنا کام ذمہ داری کے ساتھ کرتے ہیں اور عوامی مسائل پر توجہ دیتے ہیں۔ نتن گڈکری سوشل میڈیا پلیٹ فارمس پر بھی سرگرم رہتے ہیں۔ ٹوئٹر اور فیس بک کے ساتھ ساتھ ان کا اپنا یوٹیوب چینل بھی ہے۔ انھوں نے ایک بار خود بتایا تھا کہ کس طرح انھوں نے سوشل میڈیا سے کمائی شروع کر دی ہے۔