سنبھل:  سنبھل کے دریا پور تھانے کے ایکوڈا کمبوہ گاؤں میں 10 جنوری کی صبح ایک رہائشی مکان کے ایک کمرے میں لڑکی کی لاش ملنے سے آس پاس کے گاؤں میں کہرام مچ گیا۔ سنبھل ایس پی چکریش مشرا کی ہدایت پر ایک ٹیم تشکیل دی گئی اور تحقیقات میں شامل پولیس کو کچھ شواہد ملے تو وہ حیران رہ گئے۔ بتایا گیا ہے کہ لڑکی کو پڑوس میں رہنے والے لڑکے سے محبت تھی، جس سے اس کے والد اور بھائی کافی ناراض تھے۔ ناراض بھائی اور والد نے لڑکی کا گلا کھونٹ کر قتل کردیا۔ پولیس کے مطابق والد نے لڑکی کا منہ دبایا اور بیٹے نے اسکارف سے گلا دبا ہلاک کردیا۔ متوفی لڑکی کی عمر 19 سال تھی۔ پولیس نے لاش کو پوسٹ مارٹم کے لیے بھیج دیا اور پوسٹ مارٹم رپورٹ آنے پر پتہ چلا کہ اسے گلا دبا کر قتل کیا گیا ہے، جس کی بنیاد پر پولیس نے تفتیش شروع کر دی اور شک کی بنیاد پر پولیس نے والد اور بھائی کو گرفتار کر لیا۔ پولیس کی جانب سے پوچھ گچھ میں ملزمان نے جرم کا اعتراف کرلیا۔ملزم والد نے پولیس کو بتایا کہ ان کی بیٹی پڑوس میں رہ رہے شہزاد نامی نوجوان سے محبت کرتی تھی اور اس دوران دونوں کی کئی بار ملاقات ہوئی جس پر گھروں کو شک ہوا کہ ان دونوں کے درمیان محبت ہے، جس کے بعد گھر والوں نے مخالفت کی۔ گھر والوں کی مخالفت کی ایک وجہ یہ بھی تھی لڑکا دوسری ذات سے تعلق رکھتا تھا۔ اس دوران گھر والوں نے کئی بار لڑکی کو منع کیا لیکن لڑکی اپنی حرکت سے باز نہیں آرہی تھی، جس کے بعد والد اور بھائی نے بدنامی سے بچنے کے لیے لڑکی کا قتل کردیا۔ ایک ملزم جو لڑکی کا بھائی ہے، نے بتایا کہ جب بہن سو رہی تھی تو باپ نے اس کا چہرہ دبایا اور میں نے اسکارف سے گلا دبا ہلاک کر دیا۔ فی الحال دونوں کے اعتراف جرم کے بعد پولیس نے انہیں باضابطہ گرفتار کرکے جیل بھیج دیا۔ ایس پی چکریش مشرا نے میڈیا کو عزت کے نام پر اس سنسنی خیز قتل کی تفصیلات فراہم کیں۔