ممبئی: شارلن چوپڑا نے بالی ووڈ اداکارہ راکھی ساونت کی گرفتاری کی خبر سوشل میڈیا پر وائرل کی تھی۔ لیکن ممبئی پولس کا کہنا ہے کہ انہوں نے راکھی کو گرفتار نہیں کیا ہے، پولس کا کہنا ہے کہ راکھی کو صرف پوچھ تاچھ کےلیے بلایا گیا تھا، ان کی کوئی کسٹڈی یا گرفتاری نہیں ہوئی ہے، ساتھ ہی انہو ںنے کہاکہ شارلن چوپڑا نے غلط معلومات ٹوئٹ کی ہے۔ راصل راکھی ساونت پر الزام ہے کہ انھوں نے کچھ وقت پہلے اداکارہ شرلن چوپڑا کی قابل اعتراض ویڈیو اور تصویریں سوشل میڈیا پر وائرل کر دی تھیں۔ اس کے بعد شارلن نے پولیس میں گزشتہ سال راکھی ساونت کے خلاف کیس درج کروایا تھا۔ اب اسی معاملے میں شارلن کی شکایت کے بعد آج امبولی پولیس نے راکھی کو طلب کیا۔راکھی ساونت کی گرفتاری کی خبر شارلن چوپڑا نے اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹ کے ذریعہ دی ۔ شارلن نے ٹوئٹ کیا کہ ’’بریکنگ نیوز... امبولی پولیس نے ایف آئی آر 2022/883 کے سلسلے میں راکھی ساونت کو گرفتار کیا ہے۔ کل راکھی ساونت کے اے بی اے 2022/1870 کو ممبئی سیشن عدالت نے خارج کر دیا تھا‘‘۔واضح رہے کہ اداکارہ راکھی ساونت لگاتار اپنی شادی اور ماں کی بیماری کو لے کر سرخیوں میں ہیں۔ ان دنوں راکھی ساونت بے حد ہی مشکل دور سے گزر رہی ہیں۔ پہلے عادل خان نے شادی سے انکار کیا تھا، حالانکہ بعد میں انھوں نے شادی کا اعتراف کر لیا۔ پھر بیماری کی وجہ سے راکھی کی ماں کی حالت نازک ہو گئی۔ اس کے بعد راکھی ساونت نے بتایا کہ ان کا حمل ضائع ہو گیا ہے۔ ان سبھی وجہ سے وہ گزشتہ کچھ دنوں میں موضوعِ بحث رہی ہیں۔ اب وہ اپنی گرفتاری کی خبر کو لے کر سرخیوں میں ہیں۔گزشتہ روز عادل سے مفاہمت کے بعد ان کی حجاب میں تصویر بھی وائرل ہوئی تھی جسے یوزر نے خوب سراہا تھا۔