دیوبند: سمیر چودھری۔
۱۲ فروری کو دہلی کے رام لیلا میدان میں منعقد ہونے والے جمعیۃ علماءہند کے چونتیس ویں اجلاس عام کی تیاری کے سلسلہ میں ایک مشاورتی اجلاس جمعیۃ علماءہریانہ پنجاب ہماچل چنڈی گڑھ کے زیر اہتمام مولانا علی حسن مظاہری صدر جمعیۃ علماءہریانہ پنجاب ہماچل چنڈی گڑھ کی صدارت میں دارالعلوم امدادیہ گڑھی یمنا نگر میں منعقد ہوا۔ جس کی نظامت جمعیۃ علماءہریانہ پنجاب ہماچل چنڈی گڑھ کے سکریٹری مولانا عبداللہ خالد قاسمی خیرآبادی نے کی۔ 
پروگرام کا آغاز دارالعلوم امدادیہ کے استاد تجوید و قرات قاری محمد یاسر کی تلاوت کلام پاک سے آغاز ہوا۔ مہمان خصوصی کی حیثیت سے جمعیۃ علماءہند کے ناظم عمومی مولانا حکیم الدین قاسمی نے شرکت کی۔خطبہ استقبالیہ ناظم اجلاس مولانا عبداللہ خالد قاسمی خیرآبادی نے پیش کیا اور جمعیۃ علماءہند کے کام و ملک و ملت کے مفاد میں اس کی سرگرمیوں کو بتایا۔ جمعیۃ علماءہند کے اجلاس عام کے اغراض و مقاصد پر روشنی ڈالتے ہوئے انہوں نے ہریانہ پنجاب ہماچل چنڈی گڑھ سے تشریف لائے تمام ضلعی صدور و نظما سے اپیل کی کہ وہ اجلاس عام میں شرکت کو یقینی بنائیں اور علاقائی طور سے ہر ممکن تعاون پیش کریں۔ مولانا خیرآبادی نے اجلاس عام کی تیاری کے سلسلہ میں ایک تشکیلی فارم پیش کیا جس کو تمام علاقائی ذمہ دارا ن جمعیۃ نے بھر کر اپنے تعاون کا اظہار کیا۔

مولانا حکیم الدین قاسمی نے اپنے خطاب میں کہا کہ جمعیة علماءہندسے وابستگی تمام مسلمانوں کے لئے ضروری ہے، ملک کے موجودہ حالات میں اپنے دستوری حقوق کے تحفظ اور ملک و ملت کی ترقی کے لئے کامیابی کی ضمانت ہے۔مولانا قاسمی نے کہا کہ یہ اجلاس عام کسی حکومت سے متاثر ہوکر یا کسی سے مرعوب ہوکر ہرگز نہیں ہورہا ہے بلکہ یہ تو جمعیة علماءہند کا ایک دستوری طریقہ اور ایک نظام کے مطابق ہورہا ہے۔مسلمانوں کو خطاب کرتے ہوئے این آر سی کے حوالہ سے مولانا نے کہا کہ موجودہ دور میں ووٹر لسٹ میں اندراج، آدھار کارڈ کی تیاری سب کے لئے ضروری ہے اور تمام دستاویزات مین یکسانیت کا خیال ضرور رکھا جائے،آنے والے یوم جمہوریہ کے حوالہ سے کہا کہ تمام حضرات اپنے اپنے حلقہ اثر میں یوم جمہوریہ کے پروگرام ضرور منعقد کریں اور اس میں برادران وطن اور سرکاری ضلع انتظامیہ کو شریک کرکے ملک و ملت کے لئے اپنے اکابر کی قربانیوں اور کارناموں کو ضرور بیان کریں۔جمعیة یوتھ کلب کے آرگنائزر مولانا قاری احمد عبداللہ نے انقلابی نظم پیش کی۔الجمعیة بک ڈپو کے منیجر مولانا ضیاءاللہ قاسمی نے جمعیة علماءہند کی قربانیوں کو بیان کیا اور موجود حالات میں جمعیة علماءہند کے اجلاس عام کو ضروری قرار دیا۔ بیت العلوم پپلی مزرعہ کے استاد مولانا شریف احمد قاسمی نے بھی خطاب کیا۔
صدر اجلاس مولانا علی حسن مظاہری صدر جمعیة علماءہریانہ پنجاب ہماچل چنڈی گڑھ کے کلمات تشکر اور دعاءپر اجلاس اختتام پذیر ہوا۔ اس دوران حاجی محمد اکرام پانی پت، حافظ مطلوب حسن نرائن گڑھ، مولانا محمد عارف جیسلمیری، مولانا محمد عارف گڑھی جلالپور، حافظ محمد فرقان، مولانا عبدالخالق مظاہری ندوی، پرواز میڈیا سینٹر کے ذمہ دار نور علی ہدایتی، مفتی مرغوب مالیر کوٹلہ، حافظ محمد انس کے علاوہ تینوں صوبوں کے ارکان عاملہ و مدعوئین خصوصی خاص طور پر شریک اجلاس رہے۔دارالعلوم امدادیہ یمنا نگر کے ناظم تعمیر و ترقی حافظ محمد تعریف، مولانا عبدالملک مظاہری قاری محمد منتظر قاری فرید الدین اور تمام اساتدہ مدرسہ نے تمام مہمانوں کا استقبال کیا۔