بھوپال:  بی جے پی ایم پی اور مالیگاؤں بم دھماکہ کی ملزم سادھوی پرگیہ سنگھ ٹھاکر کرناٹک میں ایف آئی آر درج ہونے کے بعد بھی ‘چھری تیز کرنے’ کے اپنے متنازعہ بیان پر قائم ہیں۔ پرگیہ سنگھ نے اب کہا ہے کہ ‘میں ایک سنیاسی ہوں، میرے بیان سے لو جہاد چلانے والوں کا ایجنڈا ناکام ہو گیا ہے۔ میں جنگ میں محبت کے گیت نہیں گاتی اور نہ گاؤں گی۔ستیہ ہندی کے مطابق پرگیہ سنگھ نے سنیچر کی شام بھوپال میں سنسکرت بھارتیہ مدھیہ بھارت کے سمپورتی تقریب میں بطور مہمان خصوصی شرکت کی اور تقریر کی۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے ملک میں 31 دسمبر کو نیا سال منانے کا کلچر نہیں ہے۔پرگیہ سنگھ نے کہا، ‘شاید کچھ لوگوں کا ایجنڈا ناکام ہو گیا ہے، اسی لیے وہ شور مچا رہے ہیں۔ میں نے کسی کا نام نہیں لیا۔ میں مادرانہ طاقتوں کا احترام کرتا ہوں، ان لڑکیوں کو جو گھروں سے اغوا کر کے مردوں کے طور پر بیچ دی جاتی ہیں۔ اغوا کر کے قتل کر دیتے ہیں۔ گھر میں محفوظ نہیں تو ہم کہاں رہیں گے؟ مجھے ماں کی طاقت کی فکر ہے۔ میں نے ماں کی طاقت کے تحفظ کی بات کی تھی۔پرگیہ نے 31دسمبر کو اپنے بیان میں کہا”میرے خیال میں تحفظ پر حملہ کرنے والوں کو ہی برا لگے گا اور کسی کو برا نہیں لگے گا۔ اگر کوئی ملک میں لڑکیوں کے سماجی، خاندانی، مسائل کو دیکھے گا تو وہ اسے کبھی منفی انداز میں نہیں لے گا۔ میں نے کسی کا نام نہیں لیا، سماجی صورتحال پر بات کی ہے۔ اسی میں ہمارا درد ہے۔ مائیں لڑکیاں عدم تحفظ کا شکار ہیں۔ میں پہلے بھوپال میں بھی بات کر چکی ہوں۔ جو لوگ لوجہاد چلا رہے ہیں، ان کا ایجنڈا ناکام ہو چکا ہے۔