سہارنپور میں بڑا حادثہ، پٹاخہ فیکٹری میں لگی زبردست آگ کے بعد دھماکے، چار افراد ہلاک، سی ایم یوگی نے کیا افسوس کا اظہار۔
سہارنپور: اتر پردیش کے سہارنپور سے ایک بری خبر سامنے آئی ہے۔ تھانہ سرساوا علاقہ کے سورانا گاؤں کے نزدیک واقع پٹاخہ فیکٹری میں زبردست آگ لگنے سے چار لوگوں کی موت ہو گئی ہے۔
اس کے علاوہ ملبے تلے کچھ لوگوں کے دبے ہونے کا خدشہ ہے۔ جبکہ اس واقعہ سے پورا علاقہ دھماکوں کے خطرے سے لرز اٹھا ہے۔ سہارنپور کے سینئر سپرنٹنڈنٹ آف پولیس آکاش تومر نے اس واقعہ کے بارے میں بتایا کہ ضلع کے سرساوا تھانہ علاقہ کی پٹاخہ فیکٹری میں آگ لگنے سے چار لوگوں کی موت ہو گئی ہے۔ کافی کوششوں کے بعد آگ پر قابو پالیا گیا ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ اس معاملے میں ضروری کارروائی کی جا رہی ہے۔
معلومات کے مطابق پٹاخہ فیکٹری میں آگ لگنے کے بعد نہ صرف پورا گھر جل کر خاکستر ہو گیا بلکہ وہاں کھڑی گاڑیاں بھی جل کر راکھ ہو گئیں۔ یہی نہیں آگ کی اطلاع ملتے ہی فضائیہ کی فائر بریگیڈ سمیت تین فائر ٹینڈر گاڑیاں آگ بجھانے کے لیے موقع پر پہنچ گئیں۔ ساتھ ہی کافی کوششوں کے بعد آگ پر قابو پالیا گیا ہے۔ پولیس کے مطابق پٹاخے بنانے والی فیکٹری میں آگ لگنے کے بعد زور دار دھماکا ہوا جس کی آواز کئی کلومیٹر تک سنی گئی۔ وہیں اس واقعہ کو لے کر علاقے میں خوف و ہراس کا ماحول ہے۔ اس معاملے پر ایس ڈی ایم نے کہا کہ آگ کی وجہ ابھی تک واضح نہیں ہے۔ فی الحال جے سی بی کی مدد سے ملبہ ہٹانے کا کام جاری ہے، تاکہ اگر کوئی اس کے نیچے دب جائے تو اسے باہر نکالا جا سکے۔ یہ بھی بتایا کہ یہ لائسنس یافتہ پٹاخے کی فیکٹری تھی۔

چیف منسٹر یوگی آدتیہ ناتھ نے افسوس کا اظہار کیا۔
وہیں یوپی کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے سہارنپور پٹاخہ فیکٹری میں آتشزدگی کے حادثے میں لوگوں کی موت پر گہرے دکھ کا اظہار کیا ہے۔ وزیر اعلیٰ نے سوگوار خاندانوں سے اظہار ہمدردی کی۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے ضلع انتظامیہ کے افسران کو موقع پر پہنچ کر پھنسے ہوئے لوگوں کو بحفاظت نکالنے اور متاثرہ افراد کو مناسب علاج فراہم کرنے کی ہدایت دی ہے۔ واضح رہے کہ سبھی مرنے والے سینی برادری سے تعلق رکھتے تھے۔