عاشق نوجوان کو پیٹ پیٹ کردیا ہلاک، متوفی کے والد کی تحریر پر سات کے خلاف مقدمہ درج، ملزمان گرفتار۔
دیوبند: (سمیر چودھری)
عشق معاشقہ کے سبب پیٹ پیٹ کر کئے گئے نوجوان کے قتل کے معاملے میں پولس نے منگل کو مقدمہ درج کر کے ساتوں ملزمان کو جیل بھیج دیا۔20 مئی کو علاقے کے ننھیرا آسا گاوں کے رہنے والے 19 سالہ انوج کو گاوں کے ہی کئی لوگوں نے بری طرح پیٹ کر زخمی کر دیا تھا۔گھر والوں نے انوج کو تشویشناک حالت میں رشی کیش کے ایمس اسپتال میں داخل کرایا۔ جہاں کئی روز زندگی اور موت کی کشمکش کے درمیان 26 مئی کو نوجوان کی موت ہوگئی تھی۔ 
انوج کے والد کلدیپ نے اپنے بیٹے کو قتل کرنے کے الزام میں گاوں ہی سات لوگوں کے خلاف پولیس میں شکایت درج کرائی تھی۔بتایا جاتا ہے کہ متوفی انوج کا ایک لڑکی کے ساتھ عشق تھا اور یہ بات لڑکی کے اہل خانہ گوارہ نہیں ہوئی، مقتول کے والد کلدیپ کے مطابق ملزم فریق نے اس کے بیٹے انوج کو بہانے سے بلایا اور اسے جنگل میں لے گیا اور اس کی بری طرح پٹائی کی۔ جس میں وہ شدید زخمی ہو گیا۔ یہی نہیں، چندینا کولی گاوں کے رہنے والے اس کے دوست منٹو پر بھی حملہ کیا گیا۔ انوج کو نازک حالت میں رشی کیش کے ایمس میں داخل کرایا گیا جہاں اس کی موت ہوگئی۔ کوتوالی انچارج پربھاکر کنیتورا نے بتایا کہ ملزمین دھرم پال، منوج، رویندر، تیرتھ پال، تیج پال، بٹو اور نتن کو دفعہ 307 کے تحت مقدمہ درج کرنے کے بعد جیل بھیج دیا گیا ہے۔