دیوبند: سمیر چودھری۔
دیوبند علاقہ کے انبہٹہ روڈ سے نامعلوم شخص کی لاش ملنے سے علاقہ میں سنسنی پھیل گئی۔ اطلاع ملنے پر موقع پر پہنچی پولیس نے آس پاس کے لوگوں سے لاش کی شناخت کرنے کی کوشش کی لیکن اس کی شناخت نہیں ہوسکی۔ پولیس نے لاش کو قبضہ میں لے کر پوسٹ مارٹم کے لئے بھیج دیا، اطلاع کے مطابق آج صبح گاﺅں کے باشندوں کے ذریعہ پولیس کو اطلاع دی گئی کہ رن کھنڈی پولیس چوکی کے نزدیک انبہٹہ روڈ پر سڑک کنارے ایک شخص کی لاش پڑی ہے ، اطلاع ملنے پر سی او دیوبند رام کرن سنگھ اور تھانہ انچارج پولیس فورس کے ساتھ موقع پر پہنچے اور لوگوں سے لاش کی شناخت کرنے کی کوشش کی لیکن کافی کوشش کرنے کے باوجود بھی گاﺅں کے باشندے اس کی شناخت نہیں کرسکے۔ جس کے بعد پولیس نے لاش کو قبضہ میں لے کر پوسٹ مارٹم کے لئے بھیج دیا، اس سلسلہ میں سی او دیوبند رام کرن سنگھ نے بتایا کہ مرنے والے کی عمر تقریباً 45سال ہے اور اندازہ لگایا جارہا ہے کہ ٹھنڈ کے سبب اس شخص کی موت ہوئی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ پولیس لاش کی شناخت کی کوشش کے ساتھ تمام پہلوﺅں پر جانچ کررہی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ لاش کو پوسٹ مارٹم کے لئے بھیج دیا۔ 

دوسری جانب گزشتہ رات کہرے کے سبب ایک گاڑی بے قابو ہوکر سڑک کے کنارے پلٹ گئی جس کی وجہ سے گاڑی میں سوار خواتین زخمی ہوگئیں ، جنہیں علاج کے لئے سرکاری اسپتال میں داخل کرایا گیا۔ جہا ں سے انہیں ابتدائی طبی امداد کے بعد ہائیر سینٹر ریفر کردیا گیا ،لگاتار پڑرہے کہرے کی وجہ سے اب سڑک پر سفر کرنا بھی مشکل ہورہا ہے، گزشتہ رات گاﺅں نعمت پور سے دیوبند کے محلہ سرائے کہران اور منگلور کی رہنے والی خواتین گاڑی میں سوار ہوکر واپس اپنے گھر جارہی تھیں ، گاﺅں بنہیڑہ خاص کے نزدیک اچانک گاڑی بے قابو ہوکر پلٹ گئی، جس میں سوار آدھا درجن سے زائد خواتین زخمی ہوگئیں۔ خواتین کی چیخ وپکار سن کر راہ گیروں اور گاﺅں کے باشندوں نے زخمی خواتین کو گاڑی سے باہر نکالا اور انہیں دیوبند کے سرکاری اسپتال میں داخل کرایا ، زخمیوں میں کشن، کسم، سنیتا، کیلا اور انیتا کو ابتدائی طبی امداد کے بعد ہائیر سینٹر ریفر کردیا۔ تھانہ انچارج نے بتایا کہ کہرے کے سبب گاڑی سڑک کے کنارے کھائی میں پلٹ گئی تھی ۔ انہوں نے بتایا کہ سبھی خواتین شدید طور پر زخمی ہیں ان خطرے سے باہر ہیں۔